49

کیا نفلی صدقہ میں مسجد یا مدرسہ کے لیے قالین ( کارپیٹ ) لے سکتے ہیں؟

سوال

کیا نفلی صدقہ میں مسجد یا مدرسہ کے لیے قالین ( کارپیٹ ) لے سکتے ہیں؟

جواب:

جی ہاں! نفلی صدقہ مسجد میں دے سکتے ہیں، اسی طرح مدرسے کے لیے قالین بھی نفلی صدقہ کے پیسوں سے دیا جا سکتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

لما فی سنن ابن ماجہ:

عن ابي هريرة ، قال: قال رسول الله صلى الله عليه وسلم:” إن مما يلحق المؤمن من عمله، وحسناته بعد موته، علما علمه ونشره، وولدا صالحا تركه، ومصحفا ورثه، او مسجدا بناه، او بيتا لابن السبيل بناه، او نهرا اجراه، او صدقة اخرجها من ماله في صحته وحياته يلحقه من بعد موته”.

(أبواب كتاب السنة، بَابُ ثَوْابِ مُعَلِّمِ النَّاسِ الْخَيْرَ، حدیث نمبر: 242)

وفی الھندیة:

لا يجوز أن يبني بالزكاة المسجد، وكذا القناطر والسقايات، وإصلاح الطرقات، وكري الأنهار، والحج والجهاد، وكل ما لا تمليك فيه، ولا يجوز أن يكفن بها ميت، ولا يقضى بها دين الميت كذا في التبيين” ۔ 

(کتاب الزکاة، الباب السابع فی المصارف، ج: 1، ص: 188، ط: دارالفکر بیروت)

واللہ تعالی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں