25

سوال:کیا بیوی کی خالہ سے نکاح کرنا جائز ہے؟

سوال:کیا بیوی کی خالہ سے نکاح کرنا جائز ہے؟

بسم الله الرحمن الرحيم

اگر بیوی کا انتقال ہو جائے یا اسے طلاق دیدی جائے اور اس کی عدت پوری ہو جائے تو اس کی خالہ سے نکاح کرنا شرعاً جائز ہے، لیکن بہ یک وقت بیوی اور اس کی خالہ یعنی بھانجی اور خالہ کو نکاح میں جمع کرنا جائز نہیں ہے، حرام ہے۔

وحرم الجمع بین المحارم نکاحاً أي عقدا صحیحاً وعدّة وحرم الجمع وطأً بملک یمین بین امرأتین فرضت ذکراً لم تحلّ للأخری أبداً لحدیث مسلم: لاتنکح المرأة علی عمتہا ․․․․․․ تمامہ ولا علی خالتہا ولا علی ابنة أخیہا ولا علی ابنة اختہا (درمختار مع الشامی: ۴/۱۱۶، ۱۱۷، ط: زکریا، فصل فی المحرمات)۔

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

0 Reviews

Write a Review

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں