74

10 محرم کو اہل و عیال پر اچھا خرچ کرنا اور بہتر کھانا کرنے کے بارے میں احناف کیا کہتے ہیں؟

سوال
10 محرم کو اہل و عیال پر اچھا خرچ کرنا اور بہتر کھانا کرنے کے بارے میں احناف کیا کہتے ہیں؟

جواب
عاشوراء  (دس محرم) کے روز اپنے اہل و عیال پر رزق کی وسعت اور فراوانی کی ترغیب وارد ہوئی ہے،  حضرت ابن مسعود رضی اللہ عنہ راویت کرتے ہیں کہ حضورِ اکرم ﷺ نے فرمایا:  “جو شخص عاشورہ کے دن اپنے اہل و عیال کے خرچ میں وسعت اختیار کرے تو اللہ تعالی سارے سال اس کے مال و زر میں وسعت عطا فرمائے گا۔  حضرت سفیان رحمہ اللہ کہتے ہیں کہ ہم نے اس کا تجربہ کیا تو ایسا ہی پایا”۔ (رزین )

” عن ابن مسعود قال: قال رسول الله صلى الله عليه و سلم : من وسع على عياله في النفقة يوم عاشوراء وسع الله عليه سائر سنته. قال سفيان : إنا قد جربناه فوجدناه كذلك. رواه رزين”.

اس طرح کی روایات دیگر صحابہ سے بھی مروی ہیں جو  اگرچہ سنداً ضعیف ہیں، لیکن مختلف طرق سے مروی ہونے کی وجہ سے فضائل میں قابلِ استدلال ہیں، اسی وجہ سے اکابر نے اس عمل کو مستحب قرار دیا ہے۔ نیز سفیان رحمہ اللہ کے علاوہ حضرت جابر رضی اللہ عنہ، ابن الزبیر ، شعبہ اور یحییٰ بن سعید رحمہم اللہ سے بھی یہ منقول ہے کہ ہم نے اس کا تجربہ کیا تو ایسا ہی پایا۔

مواهب الجليل لشرح مختصر الخليل – (3 / 316):

فقط واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں