120

ہم نے قربانی کے لئے ایک بکری لی، جو دودھ دینے والی تھی، اس میں سے میرے ایک دوست نے بغیر بتائے دودھ نکال لیا، تو ہم نے وہ دودھ اسی وقت ضائع کر دیا، اب اس بکری کی قربانی کرنا کیسا ہے؟

سوال

ہم نے قربانی کے لئے ایک بکری لی، جو دودھ دینے والی تھی، اس میں سے میرے ایک دوست نے بغیر بتائے دودھ نکال لیا، تو ہم نے وہ دودھ اسی وقت ضائع کر دیا، اب اس بکری کی قربانی کرنا کیسا ہے؟

جواب: قربانی کے جانور کا دُودھ نکالنا جائز نہیں ہے، اگر کسی نے ایسا کرلیا، تو دُودھ یا اس کی قیمت کا صدقہ کرنا واجب ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی الھندیۃ:

ولو حلب اللبن من الاضحیۃ قبل الذبح او جز صوفھا یتصدق ولا ینتفع بہ کذا فی الظھیریۃ۔

(الفتاویٰ الھندیۃ: 301/5، ط:رشیدیہ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں