90

بی فار یو کمپنی میں پیسے انویسٹ کرنےکا شرعی حکم کیا ھے؟

بی فار یو کمپنی میں پیسے انویسٹ کرنےکا شرعی حکم کیا ھے؟

جواب
اس کمپنی میں پیسے انویسٹ کرنا جائز نہیں ہے؛ کیوں کہ ایک تو مذکورہ کمپنی ڈیجیٹل کرنسی میں انویسمنٹ کرتی ہے،  جس کا معاملہ تاحال مشکوک ہے، اور تاحال علماء نے اس کی خرید و فروخت کی اجازت نہیں دی ہے۔  دوسری خرابی یہ ہے کہ مذکورہ کمپنی شرکت کے لیے دیے گئے  پیسوں کا سات سے لے کر بیس فیصد تک نفع دیتی ہے، جب کہ شرکت میں لگائے گئے پیسوں کے فیصد کے اعتبار سے نفع طے کرنا جائز نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم

فتوی نمبر : 144102200279

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں